یک جہتی کے نام پر اردو اسکولوں میں شرکیہ تقاریب نا منظور : ایس آئی اؤ ناندیڑ




ملک میں پھیلتی فرقہ پرستی کے چلتے پتہ نہیں کیوں مسلمان اپنے آپ کو دیش بھکت ثابت کرنے پر تلے ہوئے ہیں. جس میں وہ کفریہ تقاریب بھی کرنے سے نہیں چوکتے. اس کی تازہ مثال ثناء اردو اسکول، ناندیڑ میں ہوئے یوم جمہوریہ کے موقع پر منعقدہ کفریہ تقریب ہیں. جس کا انکشاف سوشل میڈیا پر ویڈیو نشر ہونے کے بعد ہوا. گزشتہ کچھ ماہ قبل 21 جون 2021 عالمی یوگا ڈے کے موقع پر ناندیڑ میں بابا رام دیو کا دورہ ہوا جس کا ثناء اسکول کے طلبہ نے پھول سے استقبال کیا. اور اب یہ دوسرا معاملہ. 



اس ظمن میں ایس آئی اؤ ناندیڑ کی جانب سے ثناء اسکول کا دورہ بھی کیا گیا. اردو اسکولز میں اس طرح کی غیر اسلامی تقاریب کو لازم کرنا، پھر چاہے وہ یوگا ڈے کے نام پر ہو یا سوریہ نمسکار یا سرسوتی وندنا ہو، دستور ہند کے خلاف ہے. یہ سراسر اسلامی عقائد کے خلاف ہے. ہم ثناء اسکول معاملے میں اسکول انتظامیہ کمیٹی سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ اس تقریب میں ملوث تمام ہی اساتذہ اور خود انتظامیہ کے افراد کو فوراً معطل کیا جائے اور آئندہ اس طرح کی غیر شرعی تقاریب نہ ہو اس بات کو یقینی بنائیں. اگر آیندہ اس طرح کی تقریب منعقد ہوتی ہیں تو ایس آئی اؤ تمام ملّی، سماجی تنظیموں کے ساتھ مل کر بڑے پیمانے پر احتجاج کرے گی.

Post a Comment

Previous Post Next Post