خُدا کا آخری پیغام ہے تو جاوداں تو ہے ( ایس آئی او کے یومِ تاسیس کے موقع اردهاپور میں خطاب عام کا انعقاد


  

     اردھاپور ( شیخ زبیر )  ایس آئی او آف انڈیا کے چالیسویں یومِ تاسیس کے موقع پر مُلک بھر میں الگ الگ ریاستوں اور اور علاقوں میں یومِ شکر کے طور پر پرچم کشائی کی گئی،مختلف سرگرمیوں کا انعقاد کیا گیا اسی طرح شہر اردھاپور میں ایک شاندار خطاب عام ” خدا کا آخری پیغام ہے تو جاوداں تو ہے“ کے عنوان سے منعقد کیا گیا،اس خطاب عام میں مہمانِ خصوصی و مقرر کے طور پر ایس آئی او حلقہ ساؤتھ مہاراشٹرا کے صدر جناب سلمان مبین خان صاحب،ضلع صدر مصاحب الرحمٰن خان،امیر مقامی عبداللہ خان،نائب امیر مقامی سلیمان خان صاحب کو مدعو کیا گیا تھا، اس خطاب عام کا آغاز جناب سلیمان خان صاحب کے افتتاحی کلمات سے ہوا جناب نے بہت ہی سہل انداز میں قرآن سے مومنوں کے رشتے کی وضاحت کی اور قرآن سے 

جڑنے کے تلقین کرتے ہوئے قرآن کے حوالے سے بہت سی آیتوں کو عوام کے سامنے رکھا،اس کے بعد ضلع صدر ایس آئی او ناندیڑ مصاحب الرحمٰن نے _” *ایس آئی او بہتر مستقبل کی نوید* “ اس عنوان کے تحت ایس آئی او کے چالیس سالہ سفر کی مختصر روداد کو رکھتے ہوئے ایس آئی او کے مقصد اور طریقے کار کو عوام کے سامنے واضح کرتے ہوئے نوجوانوں کو اس سے جڑنے کی تاکید کی اُس کے بعد پروگرام کی آخری اور اہم تقریر ” *خدا کا آخری پیغام ہے تو جاوداں تو ہے* “ اس عنوان کے تحت صدر حلقہ جناب *سلمان مبین خان* صاحب نے بہت ہی سوز و گداز کے ساتھ نوجوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اُمتِ مسلمہ کا بیش 

قیمتی سرمایہ اُس کے نوجوان ہے،اللہ نے امت کو ایک خاص مقصد کے تحت پیدا کیا ہے جو اقامتِ دین کا مقصد ہے،اس معاشرے اور ملک کو ہماری ضرورت ہے اور یاد رہے کہ اگر اس ملک میں کوئی تبدیلی چاہے وہ اخلاقی لحاظ سے ہو یا معاشرتی،سیاسی،اور تعلیمی ہو وہ اُمتِ مسلمہ ہی سے آ سکتی ہے کیوں کہ اُمت کے پاس کتاب الٰہی ہے،رسول اللہ کی تعلیمات ہے کوئی دوسری قوم انقلاب لانے سے خاصر ہے،آج ملّت کے نوجوانوں کو صلاحیت کے ساتھ صالحیت کی صفت اپنے اندر پیدا کرنے کی ضرورت ہے،حالات سے خوف زدہ 

ہونے کی ضرورت نہیں ہے،ظلم کے قصیدے پڑھنے کی ضرورت نہیں ہے دنیا میں جتنی قومیں گزری ہے تاریخ اٹھا کر دیکھ لیں کے ظلم کرنے والی قومیں زیادہ دن اقتدار پر قائم نہیں رہ سکی،اور سلمان صاحب نے کہا کہ اپنے *ایمان کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے جس دل میں اللہ پر ایمان ہو وہ دنیا کے ہر خوف سے آزاد ہو تا ہے*،اس کے بعد نائب امیر مقامی سلیمان خان صاحب نے جماعت اسلامی کی رواں مہم ”رجوع الی القرآن “ کا تعارف اور تفصیلات پیش کے مہم کے دوران  کیے جانے والے کاموں میں عوام کو شرکت کی دعوت دی اور ان کی دعا پر پروگرام کا اختتام ہوا۔اس خطاب عام میں تقریباً 300 افراد شریک تھے،الحمدللہ اس پروگرام کو کامیاب بنانے میں ایس آئی او اردھا پور کے تمام ممبرز نے خاطر خواہ کوشش کی۔

Post a Comment

Previous Post Next Post