کیرالہ: وزیر خزانہ کو عہدے سے ہٹانے کے گورنر عارف محمد خان کے حکم پر تنازعہ، وزیر اعلیٰ نے کہا- ’کارروائی نہیں کریں گے‘


 

گورنر عارف محمد خان نے وزیر اعلیٰ کو لکھے گئے خط میں کہا کہ کے این بالاگوپال نے حلف کی خلاف ورزی کی ہے اور جان بوجھ کر ایسا کر کے وہ ہندوستان کے اتحاد اور سالمیت کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

ترواننت پورم: کیرالہ میں گورنر عارف محمد خان اور پنارائی وجین حکومت کے درمیان اختلافات میں اضافہ ہو رہا ہے۔ گورنر نے وزیر اعلیٰ وجین سے کہا ہے کہ وہ وزیر خزانہ کے این بالاگوپال کو عہدے سے ہٹا دیں۔ انہوں نے خط لکھ کر کہا کہ وہ کابینہ میں ان کے برقرار رہنے سے خوش نہیں ہیں۔


گورنر عارف محمد خان نے وزیر اعلیٰ کو لکھے گئے خط میں کہا کہ کے این بالاگوپال نے حلف کی خلاف ورزی کی ہے اور جان بوجھ کر ایسا کر کے وہ ہندوستان کے اتحاد اور سالمیت کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔ گورنر کے حکم کے بعد کیرالہ کے وزیر اعلیٰ نے وزیر خزانہ بالاگوپال کے خلاف آئین کے مطابق مناسب کارروائی کرنے کے گورنر کی ہدایت مسترد کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ اتوار کو گورنر عارف محمد خان نے کہا تھا کہ وزیر خزانہ کے این بالاگوپال کی آمدنی کا اہم ذریعہ شراب اور لاٹری ہے۔ وہ یہ سوال اٹھا رہے ہیں کہ کیا یوپی کے گورنر کیرالہ کے تعلیمی نظام کو سمجھ سکتے ہیں۔ میں انہیں مشورہ دیتا ہوں کہ وہ میرے بارے میں بات کریں لیکن سپریم کورٹ کے ججوں کے بارے میں ایسے ریمارکس نہ دیں۔

انہوں نے کہا کہ عدالت نے ہفتہ کے روز کیرالہ ٹیکنیکل یونیورسٹی کے وی سی کی تقرری کے خلاف فیصلہ دیا تھا۔ اس کے حوالہ سے اگر آپ کہتے ہیں کہ جج کیرالہ کے تعلیمی نظام کو نہیں سمجھتے کیونکہ وہ مہاراشٹرا اور آسام سے ہیں، تو آپ خود کو مشکل میں ڈال رہے ہیں۔

Post a Comment

Previous Post Next Post